RSS Feed

3 April, 2014 16:31

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

03-APRIL-2014

حکومت نے جو سولہ لوگ چھوڑے ہیں ان کا تعلق مختلف کیٹیگریز سے تھا۔ رانا تنویر حسین کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

کچھ لوگوں کو خدشات کے تحت پکڑا گیا تھا جبکہ کچھ نے کچھ جرائم کئیے ہوئے تھے۔ رانا تنویر حسین

حکومت کی جانب سے رہا کئیے جانے والے لوگ طالبان کی لسٹ پر نہیں تھے وہ عام لوگ تھے۔ مولانا یوسف شاہ

طالبان نے جن غیر عسکری لوگوں کی رہائی مطالبہ کیا ہے ان کی تعداد سات سو ہے۔ مولانا یوسف شاہ

ابھی تک طالبان یا حکومت کی طرف سے کوئی مطالبات سامنے نہیں آئے ہیں۔ مولانا یوسف شاہ

حکومت نے جن سولہ لوگوں کو چھوڑا ہے انہیں پولیٹیکل ایجنٹ نے پکڑا تھا ان کا طالبان سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ مولانا یوسف شاہ

طالبان نے کہا ہے کہ وہ ملک میں امن چاہتے ہیں لڑائی نہیں چاہتے۔ مولانا یوسف شاہ

میڈیا نے خالد خراسانی کے بیان کا پہلا اور آخری حصہ چوڑ کر صرف درمیان والا حصہ خبر کے طور پر پیش کیا ہے۔ مولانا یوسف شاہ

خالد خراسانی نے ٹویٹر پر اپنے متعلق چھپنے والے بیان کی تدید کی ہے۔ مولانا یوسف شاہ

خالد خراسانی شروع سے ہی طالبان کے حکومت سے مزاکرات کے خلاف تھے۔ امتیاش گل

احرارالہند نے جس فون نمبر سے اپنی دہشت گردی کی زمہ داری قبول کی وہ وہی نمبر تھا جو خراسانی استعمال کرتا تھا۔ امتیاز گل

حکومت اور طالبان کمیٹیوں کے درمیان قیدیوں کو چھوڑنے کے معاملے پر بات چیت ہو رہی ہے۔ مولانا یوسف شاہ

حکومت اور طالبان کے درمیان بات چیت کی معلومات صرف چند لوگوں تک محدود ہیں۔ پلوشہ خان

حکومت کو طالبان سے بات چیت پر پیشرفت سے پارلیمنٹ کو آگاہ کرنا چاہئیے ورنہ شکوک پیدا ہوں گے۔ پلوشہ خان

حکومت پارلیمنٹ کو بتائے کہ چھوڑے جانے والے سولہ لوگ کن جرائم میں جیل میں بند تھے۔ پلوشہ خان

طالبان سے مزاکرات کرنے کا یہ فائدہ ہوا کہ انہوں نے جنگ بندی میں توسیع کر دی ہے۔ رانا تنویر حسین

پولیٹیکل ایجنٹ بکری کی چوری پر لوگوں کو جیل میں بند کر دیتے ہیں اور وہ وہیں مر جاتے ہیں۔ امتیاز گل

پولیٹیکل ایجنٹ لوگوں سے ظالمانہ سلوک کریں گے تو پھر وہ طالبان کی حمایت تو کریں گے۔ امتیاز گل

ہمیں امید ہے کہ طالبان سے مزاکرات کے بعد ایف سی کے جوانوں کے گلے کاٹنے جیسے واقعات دوبارہ نہیں ہوں گے۔ مولانا یوسف شاہ

پاکستان پوری کوشش کر رہا ہے کہ سعودی عرب کو الخالد ٹینک اور جے ایف تھنڈر طیارے بیچے۔ رانا تنویر حسین

ہماری پوری کوشش ہے کہ پہلے اپنی ضرورت پوری کریں لیکن ساتھ میں اسلحہ برآمد بھی کریں۔ رانا تنویر حسین

حکومت کی ہر بات سے ابہام پھیل رہا ہے ایک دو لوگ بیٹھ کر فیصلے کر رہے ہیں۔ پلوشہ خان

موجودہ حکومت نے سعودی عرب، بحرین اور اینٹی شیعہ لوگوں سے مل کر ایک راستہ اختیار کیا ہے۔ امتیاز گل

حکومت کی پالیسیاں بھی غیر جمہوری ممالک والی ہیں اسے عوام کی پرواہ نہیں ہے۔ امتیاز گل

پیپلز پاارٹی اور مسلم لیگ ن کی حکومت میں کوئی فرق نہیں ہے پچھلے دور میں بھی تمام فیصلے زرداری کرتے تھے۔ امتیاز گل

طالبان سے مزاکرات میں کوئی بڑا بریک تھرو ہو گا تو پارلیمنٹ کو ضرور بتایا جائے گا۔ رانا تنویر حسین

پیپلز پارٹی کے دور میں فیصلے تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ مشورے سے کئیے جاتے تھے۔ پلوشہ خان

حکومت پارلیمنٹ کو طالبان سے مزاکرات پر کچھ نہیں بتاتی اگر مزاکرات ناکام ہوئے تو پھر ساری زمہ داری بھی حکومت کی ہو گی۔ پلوشہ خان

پاکستان میں تمام فیصلے وزیراعظم، وزیر داخلہ اور وزیر خارجہ مل کر کرتے ہیں یہ جمہوری طریقہ نہیں ہے۔ امتیاز گل

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: