RSS Feed

7 April, 2014 16:36

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

07-APRIL-2014

خواجہ سعد رفیق اور خواجہ آصف کے تنقیدی بیانات نے فوج میں ہلچل مچا دی ہے۔ طلعت حسین کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

خواجہ سعد رفیق نے سابقہ جرنیلوں کو ترکی کی طرز پر سزا دینے کی بات کی تھی۔ طلعت حسین

آئی ایس پی آر نے خواجہ سعد رفیق کے بیان پر سخت رد عمل ظاہر کرنے کا ارادہ کیا تھا جس سے بعد میں اجتناب کیا گیا۔ طلعت حسین

نواز شریف اور ان کا کیمپ مشرف کے معاملہ میں سب کے لئیے قابل قبول حل چاہتا ہے۔ طلعت حسین

نواز شریف اور ان کے کیمپ کی فوج سے مشرف کے ملک سے باہر جانے کی بات طے ہو چکی ہے۔ طلعت حسین

جس کے جو منہ میں آتا ہے وہ فوج کے بارے میں کہتا ہے مشرف پر تنقید کریں ساری فوج پر نہیں۔ مسعود شریف خٹک

پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ایک سابقہ آرمی چیف اور صدر کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ مسعود شریف خٹک

مشرف پر تنقید کرنے سے فوج کے جزبات کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

فوجی ناراض ہو تو وہ اپنے کمانڈنگ آفیسر کو بھی گولی مار سکتا ہے۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

جنرل جہانگیر کرامت کو معمولی سے بات پر نواز شریف نے نوکری سے فارغ کر دیا تھا۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

سیاست دان سمجھتے ہیں کہ اس طرح کے اقدامات کر کے وہ مارشل لا۶ کا راستہ روک لیں گے۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

اس وقت فوج میں مشرف دور والا ماحول نہیں ہے جنرل کیانی کے دور میں ملک میں دو بار الیکشن کے زریعے حکومت بنی۔ طلعت حسین

فوج سمجھتی ہے کہ اسے جمہوریت کی مدد کرنے کے باوجود مطعون ٹھہرایا جا رہا ہے۔ طلعت حسین

نواز شریف نے یہ تہیہ کیا ہوا ہے کہ فوج کی طاقت کو کم کرنا ہے۔ طلعت حسین

فوج کے متعلق نواز شریف کی اپنی سوچ بھی وہی تھی اسی لئیے ان کے وزرا۶ نے غیر زمہ دارانہ بیانات دئیے۔ طلعت حسین

لوگ مشرف پر تنقید کرتے وقت کمانڈو کا نام لیتے ہیں پاکستانی کمانڈوز دنیا میں سب سے بہترین ہیں۔ مسعود شریف خٹک

این ایل سی کیس میں جنرل کیانی نے فوج کے ڈسپلن کے مطابق ایکشن نہیں لیا تھا جو اچھی بات نہیں ہے۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

جنرل راحیل شریف واقعی ایک شریف آدمی ہیں اور نواز شریف سے ان کے بہت اچھے تعلقات ہیں۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

جنرل کیانی اپنے دور میں حکومت کے مقابلے میں اپنی ایک پالیسی چلاتے تھے اب ایسا نہیں ہے۔ طلعت حسین

اس وقت طاقت کا توازن حکومت کے حق میں ہے جو درست بات بھی ہے کیونکہ حکومت منتخب ہو کر آئی ہے۔ طلعت حسین

نواز شریف کے پاکستان کے کچھ ایسے میڈیا ہاؤسز سے تعلقات ہیں جو فوج پر تنقید کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے۔ طلعت حسین

یہ ہو نہیں سکتا کہ افغانستان اور بھارت کے مسئلے پر فوج اور حکومت ایک پیج پر نہ ہوں۔مسعود شریف خٹک

جنرل راحیل شریف کا بیان کوئی ایسا اشارہ نہیں ہے کہ جس سے حکومت کو کسی قسم کا کوئی خطرہ ہو۔ مسعود شریف خٹک

جنرل راحیل شریف کا بیان بہت بڑا اشارہ ہے وہ نواز شریف سے ٹیبل پر بات نہیں کر سکتے اس لئیے درمیانی راستہ اختیار کیا ہے۔ طلعت حسین

آرمی چیف نے حکومت کو اپنا خیال ظاہر کیا تھا کہ پاکستان کو شام کے معاملہ میں مداخلت نہیں کرنی چاہئیے۔ بریگیڈئیر محمود شاہ

سعودی عرب نے فوج کو ایک خاص منصوبے کے لئیے ایک بلین ڈالر دینے کا وعدہ کیا تھا جو بعد میں شام کے مسئلہ کے ساتھ جڑ گیا۔ طلعت حسین

امریکہ اور ایران کے درمیان تعلقات میں تبدیلی کے بعد سے سعودی عرب شام کے مسئلے پر مدد حاصل کرنے کے لئیے بہت بیچین ہے۔ طلعت حسین

اگر فوج اور حکومت نے شام کے مسئلے پر مل کر کوئی فیصلہ کیا ہے تو پھر وہ یقینا ملک کے مفاد میں ہو گا۔ مسعود شریف خٹک

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: