RSS Feed

30 April, 2014 16:07

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

30-APRIL-2014

جب سے پاکستان بنا ہے ایک دوسرے پر الزمات لگتے رہے ہیں لیکن کچھ میں حقیقت بھی ہوتی ہے۔ وسیم اختر کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

حمید گل نے بھی مانا ہے کہ ان کے ادارے سے کچھ غلطیاں ہوئی ہیں اور ابھی جیو نے بھی غلطی کی ہے۔ وسیم اختر

اصل بات یہ ہے کہ ہم غلطیوں سے سبق سیکھیں انہیں دھراتے نہیں رہیں۔ وسیم اختر

مشرف دور میں صحافیوں پر سب سے زیادہ ظلم ہوا صحافی ہمیں اپنے بیانات ریکارڈ کرواتے رہے۔ عاصمہ جہانگیر

جیو نے بہت سے لوگوں کی پگڑیاں اچھالی ہیں اس ادارے نے بھی غلطی کی ہے۔ عاصمہ جہانگیر

فوج کی حمایت میں نکلنے والی کالعدم تنظیمیں بھی ملکی سلامتی کے لئیے خطرہ ہیں۔ عاصمہ جہانگیر

میڈیا نے مثبت کے ساتھ ساتھ منفی کردار بھی ادا کیا ہے اور اداروں کو لڑانے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ عاصمہ جہانگیر

اپنے اپنے مفاد کے لئیے صحافی اور اینکرز کا کاندھا استعمال کیا جا رہا ہے۔ مظہر عباس

اگر کوئی میٹنگ بند کمرے میں ہوئی ہے تو صحافی کو کیسے پتہ چلا کہ اندر کیا بات ہوئی ہے۔ مظہر عباس

ہم جس خطے میں رہتے ہیں وہاں زمہ دارانہ صحافت کرنے کی ضرورت ہے۔ شوکت یوسفزئی

حامد میر پر حملے کی رپورٹنگ کو ہمارے دشمن ممالک نے خوب اچھالا ہے۔ شوکت یوسفزئی

جیو کی آٹھ گھنتے کی منفی نشریات کو پمرا ایک گھنٹے میں رکوا سکتی تھی۔ شوکت یوسفزئی

بانوے میں اسی میڈیا نے ایم کیو ایم کے جعلی ٹارچر سیل اور جناح پو کے نقشے دکھائے تھے۔ وسیم اختر

اس وقت جو صورت حال بنی ہوئی ہے میں اس کی زمہ داری حکومت پر ڈالتا ہوں۔ وسیم اختر

وزیراعظم کو چاہئیے تھا کہ اینکرز کو لے کر بیٹھ جاتے کہ ملکی صورت حال خراب ہے معاملے کو ٹھنڈا کریں۔ وسیم اختر

ہم نے اپنے بڑوں سے سیکھا تھا کی خبر کی تصدیق نہ ہو رہی ہو تو اس کو کچھ دیر کے لئیے روک لینا چاہئیے۔ مظہر عباس

حامد میر کو الزام لگانے کا حق تھا لیکن جیو پر ایک شخص کی تصویر اس طرح دکھائی گئی کہ جیسے وہ مجرم ہے۔ عاصمہ جہانگیر

خبر کو اچھالنا نہیں چاہئیے کیونکہ پہلا امپریشن ہی بہت برا چلا جاتا ہے۔ شوکت یوسفزئی

تعصب ماضی میں بھی تھا اب بھی ہے لیکن لیڈرشپ کی ضرورت ہے جو بات کو سلجھا دے۔ وسیم اختر

ایک میڈیا ٹریبیونل ہونا چاہئیے جہاں سب شکایت کر سکیں۔ مظہر عباس

میڈیا ہاؤسز اپنے صحافیوں کی حفاظت کا بندوبست کریں اور ان کو زمہ داری کا پابند کریں۔ عاصمہ جہانگیر

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: