RSS Feed

10 June, 2014 16:01

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

10-JUNE-2014

سب سے بڑا مسئلہ آگ پر قابو پانے کا تھا جو کیمیکلز کی وجہ سے بار بار بھڑک اٹھتی تھی۔ ایر مارشل محمد یوسف کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

رات ساڑھے گیارہ بجے کے قریب جیسے ہی پہلی دفعہ آگ بھڑکی اسے بجھانے کی کوششیں بھی شروع کر دی گئیں۔ محمد یوسف

دہشت گردوں کے بارے میں ایک فیصلہ کرنے کی ضرورت ہے یہ ملک کے لئیے ناسور کی طرح ہیں۔ شاہی سید

سول ایوی ایشن کے لوگوں کو رسکیو سرگرمیوں میں شامل کرنے کی ضرورت تھی کونکہ وہ جانتے تھے کہ ایر پورٹ پر کہاں کون سی چیز پڑی ہے۔ شاہی سید

دہشت گردی کے بعد گھر گھر تلاشی لی جا رہی ہے یہ کام پہلے کرنے کا تھا ساری معلومات موجود تھیں۔ مولا بخش چانڈیو

دہشت گردوں سے جس قسم کا اسلحہ ملا ہے یہ انتہائی خطرناک نوعیت کا ہے۔ مولا بخش چانڈیو

سکیورٹی فورسز نے اپنی جان پر کھیل کر ہزاروں لوگوں کی جانیں بچائی ہیں جو بہت ہی قابل تعریف ہے۔ طارق عظیم

وزیراعظم اور سکیورٹی کے اداروں کو اپنا رویہ تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ مولا بخش چانڈیو

وزیراعظم جلد فیصلہ نہیں لیتے انہیں اپنے اداروں پر اعتماد نہیں ہے۔ مولا بخش چانڈیو

کہا جا رہا ہے کہ کچھ لوگ سٹور میں زندہ تھے جنہیں بر وقت نہیں بچایا گیا لیکن اس بات کے شواہد موجود نہیں ہیں۔ محمد یوسف

دہشت گرد راکٹ لانچرز اور جدید اسلحے کے ساتھ ایر پورٹ پر پہنچے انہیں کسی نے راستے میں چیک کیوں نہیں کیا۔طارق عظیم

وزیراعظم کو کسی پر بھروسہ نہیں ہے آج تک اداروں کے سربراہ تک مقرر نہیں کر سکے۔ شاہی سید

وزیراعظم کو خود پر، اپنے لوگوں اور اپنے اداروں پر اعتماد کرنے کی ضرورت ہے۔ مولا بخش چانڈیو

پاکستان کو اس وقت وزیراعظم کی کم اور قائد کی زیادہ ضرورت ہے جو ملک کی سلامتی کے فیصلے لے سکے۔ مولا بخش چانڈیو

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: