RSS Feed

15 July, 2014 16:00

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

15-JULY-2014

نواز اور شہباز شریف اگر گلو بٹ والی سیاست کریں گے تو پھر ہم اس کا حصہ نہیں بن سکتے۔ لطیف کھوسہ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ہم تو پہلے دن سے کہہ رہے ہیں کہ پچھلا الیکشن آر اوز کا الیکشن تھا۔ لطیف کھوسہ

حکومت چار حلقوں کی دھاندلی کو چھپانے کے لئیے نادرا کے دفتر میں مزید غلط کام کر رہی ہے۔ مراد سعید

حکومت نے نادرا کے دفتر کی بیسمنٹ میں چار حلقوں کے نتائج کو ٹمپر کیا ہے۔ مراد سعید

آصف علی زرداری نے بڑے میچور انداز میں حکومت پر تنقید کی ہے اور یہ ان کا حق ہے۔ زعیم قادری

ہماری جماعت نے الیکشن سے پہلے ہی الیکشن کمشن پر اپنے تحفظات کا اظہار کر دیا تھا۔ زاہد خان

پچھلے الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے لیکن ہم سڑکوں کی بجائے یہ مسئلہ پارلیمنٹ میں حل کرنا چاہتے ہیں۔ زاہد خان

ملک کی تما سیاسی جماعتین اس بات پر متفق ہیں کہ پچھلے الیکشن میں دھاندلی ہوئی تھی۔ مراد سعید

ہم اپنے آئندہ لائحہ عمل کا اعلان چودہ اگست کو کریں گے۔ مراد سعید

نواز شریف منتخب وزیراعظم ہیں اگر وہ سٹیپ ڈاؤن نہیں کرتے تو پھر چودہ اگست کو ٹکراؤ کا خطرہ ہے۔ زاہد خان

ہم سمجھتے ہیں کہ شہباز شریف کا حکومت میں رہنا سانحہ لاہور کی تحقیقات کی شفافیت کی ضمانت ہے۔ زعیم قادری

شہباز شریف کی مرضی کے بغیر سانحہ لاہور نہیں ہو سکتا تھا انہیں استعفی دینا چاہئیے۔ لطیف کھوسہ

جنرل مشرف کو ملک سے بھیجنے کے لئیے جو جماعتیں متفق تھیں ان میں مسلم لیگ ن بھی شامل تھی۔ لطیف کھوسہ

ہم پارلیمنٹ، عدالت اور الیکشن کمشن کا دروازہ کھٹکھٹا چکے ہیں اب چودہ اگست کو مارچ ہو گا۔ مراد سعید

اگر چودہ اگست کو تصادم کی صورت حال پیدا ہو جائے تو حکومت کو چاہئیے کہ تحمل سے کام لے۔ زاہد خان

اگرچودہ اگست کو نواز شریف شہنشاہ بن گئے تو تصادم ہو گا وزیراعظم رہے تو نہیں ہو گا۔ لطیف کھوسہ

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: