RSS Feed

10 September, 2014 16:11

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

10-SEP-2014

انیس سو ستتر میں حکومت اور اپوزیشدن کے درمیان معاہدہ طے پا گیا تھا کہ اصغر خان اور بیگم نسیم ولی خان نے نئے مطالبات پیش کر دئیے۔ جہانگیر بدر کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

حکومت اور اپوزیشن میں معاہدہ طے پا جانے کے باوجود فوج نے حکومت پر قبضہ کر لیا تھا۔ جہانگیر بدر

مشکل وقت میں پیپلز پارٹی کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر مبشر حسن استعفی دے گئے۔ جہانگیر بدر

آج کے حالات انیس سو ستتر سے بہت مختلف ہیں اس وقت کئی شہروں میں کرفیو لگ چکا تھا۔ جنرل غلام مصطفی

اس وقت حالات بہت بدل چکے ہیں لیکن اب بھی ہم نے اپنی غلطیوں سے سبق حاصل کرنا نہیں سیکھا۔ جنرل غلام مصطفی

حکومت نے پہلے خود آرمی چیف کو مزاکرات میں مدد کرنے کی دعوت دی لیکن بعد میں انکار کر دیا۔ جنرل غلام مصطفی

آرٹیکل دو سو پنتلیس کے بارے میں خیال ظاہر کیا گیا کہ یہ مارچ کو روکنے کے لئیے لگایا گیا۔ سعد رفیق

جنرل راحیل شریف نے خود کہا ہے کہ آرٹیکل دو سو پنتالیس آپریشن ضرب عضب کی وجہ سے لگایا گیا۔ سعد رفیق

یہ بات بالکل درست ہے کہ حکومت نے فوج کو مزاکرات میں مدد کرنے کے لئیے کہا تھا۔ سعد رفیق

اگر حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان مزاکرات میں فوج کو لوگ بیٹھے تو اس بات کو ظاہر نہیں کرنا چاہئیے۔ سعد رفیق

سیاست میں لچک بنیادی بات ہوتی ہے مسئلہ صرف بات چیت سے حل ہو گا۔ جہانگیر بدر

سانحہ ماڈل ٹاؤن کے بعد چیف منسٹر پنجاب کو استعفی دینا چاہئیے تھا۔ جہانگیر بدر

ہم نے طاہرالقادری کو پیشکش کی ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن میں جس جس کا نام آتا ہے سب استعفی دے دیں گے۔ سعد رفیق

اس وقت حکومت اور پی ٹی آئی میں آپس میں اعتماد کی کمی سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ جنرل غلام مصطفی

سانحہ ماڈل ٹاؤن کے بعد چیف منسٹر استعفی دے دیتے تو بات یہاں تک نہیں پہنچتی۔ جنرل غلام مصطفی

سب جماعتیں دھاندلی کی بات کر رہی ہیں تو حکومت اگر دوبارہ ا لیکشن کروا دے تو مسٗلہ حل ہو سکتا ہے۔ جنرل غلام مصطفی

جیوڈیشل کمشن نے اگر الیکشن میں دھاندلی ثابت کر دی تو حکومت کو سبکی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ جنرل غلام مصطفی

پی ٹی آئی اپنی مرضی کے تیس حلقے چن کر ان کی تحقیقات کی بنیاد پر سارا الیکشن کالعدم کروانا چاہتی ہے۔ سعد رفیق

پی این اے نے پہلے بھٹو سے اٹھارہ حلقوں میں دھاندلی کی بات کی پھر چالیس اور پھر پورا الیکشن دوبارہ کروانے کا مطالبہ کر دیا۔ جہانگیر بدر

یہ فیصلہ سپریم کورٹ کو کرنا چاہئیے کہ وہ تحقیقات کے لئیے کتنے حلقے کھولنا چاہتی ہے۔ سعد رفیق

سپریم کورٹ کو مسئلے کے حل کے لئیے حلقوں کی کوئی کوئی نہ کوئی حد تو مقرر کرنا پڑے گی۔ جنرل غلام مصطفی

حکومت کو چاہئیے کہ کچھ ایسا کام کرے کہ بند گلی سے باہر نکلے۔ جہانگیر بدر

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: