RSS Feed

4 November, 2014 16:17

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

04-NOV-2014

میں پر امید ہوں ایک دن پاکستان کے حالات بہت اچھے ہو جایں گے۔ مخدوم امین فہیم کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ہمارے ہاں تعلیم کی کمی ہے جب تک تعلیم نہیں دی جائے گی افسوسناک واقعات ہوتے رہیں گے۔ امین فہیم

پاکستان کی حکومت کی دہشت گردی کے خلاف کوئی واضع پالیسی نہیں ہے۔ بریگیڈئر محمد سعد

بندوق کے زور پر حالات درست نہیں کئیے جا سکتے۔محمد سعد

فوج کسی علاقعے کو دہشت گردوں سے خالی کروا سکتی ہے اس کا انتظام سویلین کو ہی چلانا ہوتا ہے۔ محمد سعد

حکومت دہشت گردی کے خلاف کوئی پالیسی بنائے گی تو ہی وہ کامیاب ہو سکتی ہے۔ محمد سعد

حکومت کی دہشت گردی کے خلاف کوئی پالیسی نہیں ہے اور نہ ہی اس کے خلاف کوئی مربوط کوشش کی جا رہی ہے۔ محمود الرشید

چند ماہ پہلے حکومت نے دہشت گردی کے خلاف ایک نیشنل پالیسی بنانے کا اعلان کیا تھا لیکن پھر اس پر کچھ نہیں کیا گیا۔ محمود الرشید

اگر سٹیٹ سنجیدگی سے دہشت گردی کے خلاف کوئی پالیسی بنا لے تو کسی دہشت گرد کی جرات نہیں ہے کہ وہ کچھ کر سکے۔ شیخ وقاص اکرم

آپریشن ضرب عضب کا رد عمل سامنے آنا تھا لیکن صوبائی حکومتیں اس کے لئیے تیار نہیں ہیں۔ شیخ وقاص اکرم

صوبوں کے پاس دہشت گردی سے نمٹنے کے لئیے پولیس فورس اور اسلحے کی کمی ہے۔ شیخ وقاص اکرم

دہشت گردوں کے پاس بھاری اسلحہ ہے جو بغیر مشینری کے نہیں آ سکتا یہ کیسے آ گیا۔ امین فہیم

جماعت الاحرار سب سے خطرناک گروپ ہے جو افغانستان میں کنڑ کے مقام پر چھپا بیٹھا ہے۔ محمد سعد

جماعت الاحرار کی تعداد تقریباْ بیس ہزار ہے اور اسے سعودی عرب سے پیسے ملتے ہیں نیز یہ ڈرگ بھی سمگل کرتے ہیں۔ محمد سعد

سعودی عرب کے علاوہ امریکہ بھی دہشت گردوں کی مدد کرتا ہے۔ شیخ وقاص اکرم

مشرف دور میں دہشت گردی کو سب سے زیادہ فروغ ملا بھارت بھی ملوث ہے۔ محمود الرشید

میرے خیال میں حکومت کو عمران خان سے سنجیدہ گفتگو کرنے کی ضرورت ہے۔ امین فہیم

عمران خان کے کچھ مطالبات جائز ہیں انہیں مان لینے میں کوئی حرج نہیں ہے۔ امین فہیم

دھرنے کی وجہ سے حکومت بہت کمزور ہو گئی ہے عمران خان کی حکومت بن بھی گئی تو مسلم لیگ ن اسے نہیں چلنے دے گی۔ محمد سعد

سیاسی مسائل اگر حکومت حل نہیں کرے گی تو پھر کوئی اور کرے گا۔ محمد سعد

عمران خان کے انتخابی اصلاحات اور دھاندلی کی تحقیقات کے مطالبات پر کام ہونا چاہئیے۔ شیخ وقاص اکرم

وزیراعظم کے حکم سے کوئی حلقہ نہیں کھل سکتا اس کے لئیے قانون میں تبدیلی کرنے کی ضرورت ہے۔ شیخ وقاص اکرم

حکومت ک یہی رویہ کہ دھاندلی کی تحقیقات کروانا اس کا کام نہیں ہے اصل مسئلہ ہے۔ محمود الرشید

اب تک پندرہ حلقے کھلے ہیں اور ان تمام میں بہت وسیع دھاندلی سامنے آئی ہے۔ محمود الرشید

حکومت سنجیدگی دکھائے اور دھاندلی کے زمہ داروں کو سزا دے۔ محمود الرشید

اگر حکومت تیس نومبر تک عمران خان کے ساتھ سنجیدگی سے معاملات طے کر لے اور کاروائی کرے تو مسئلہ حل ہو سکتا ہے۔ امین فہیم

الیکشن کا نظام درست کرنے کے لئیے قانون سازی کرنے کی ضرورت ہے۔ محمد سعد

اگر حکومت سنجیدگی اور مثبت روئیے سے آگے بڑھے تو پی ٹی آئی خوش آمدید کہے گی۔ محمود الرشید

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: