RSS Feed

6 January, 2015 16:05

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

06-JAN-2015

ملٹری کورٹس کے علاوہ بھی بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے تا کہ ملک سے دہشت گردی ختم ہو۔ سعید غنی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئیے معاشرے میں ایک ماحول بنانے کی ضرورت ہے۔ سعید غنی

سب سے بڑی زمہ داری حکومت کی ہے کونکہ تمام اختیارات اس کے پاس ہیں۔ عارف علوی

نیشنل ایکشن پلان سے پہلے انٹرنل سکیورٹی پلان بنا لیکن اس پر بالکل عملہ نہیں کیا گیا۔ عارف علوی

خراسانی نے پشاور میں بچوں کو مارنے پر ایک حدیث کو جواز بنایا ہے جو بالکل غلط ہے۔ عارف علوی

مزہبی طبقے کو خراسانی کا جواب دینے کے لئیے سامنے آنا چاہئیے۔ عارف علوی

مدرسہ اصلاحات کے خلاف رد عمل آئے گا اور تھوڑا تھوڑا تو سامنے آنا بھی شروع ہو گیا ہے۔ فیصل سبزواری

اچھی بات یہ ہے کہ آج کوئی ایسی جماعت نہیں ہے کہ جو دہشت گردی کے خلاف نہ ہو۔ سعید غنی

پشاور کا سانحہ اسلامی تاریخ کا اندہ ناک ترین واقعہ ہے۔ قاری محمد حنیف جالندھری

اسلام تو جنگ میں بھی عورتوں اور بچوں کو مارنے کی اجازت نہیں دیتا ہے۔ محمد حنیف جالندھری

سانحہ پشاور کے زمہ داروں اور اس سازش کے پس پردہ لوگوں کو عبرت ناک سزا دی جائے۔ محمد حنیف جالندھری

مردسوں کی رجسٹریشن کا فیصلہ دو ہزار چار میں ہو گیا تھا۔ محمد حنیف جالندھری

بہت سے مدرسوں کی رجسٹریشن کی درخواستیں موجود ہیں لیکن عمل نہیں کیا جا رہا۔ محمد حنیف جالندھری

صرف مدرسے نہیں پورے تعلیمی نظام میں اصلاحات کرنے کی ضرورت ہے۔ محمد حنیف جالندھری

فوجی عدالتوں سے صرف سول عدالتوں کے ججوں کے خوف کا معاملہ حل ہوا ہے۔ عارف علوی

مجھے ڈر ہے کہ کہیں مدرسہ اصلاحات کی وجہ سے حکومت اور مزہبی طبقے میں جنگ نہ شروع ہو جائے۔ عارف علوی

مدرسہ اصلاحات کرتے وقت دانشمندی سے چلنے کی ضرورت ہے۔ عارف علوی

تحریک طالبان سے متصل جماعتوں کا ایجنڈا پاکستان کی ریاست کے خلاف ہے۔ فیصل سبز واری

وزیراعظم کو دہشت گردی کے خلاف زیادہ اور کھل کر بولنا چاہئیے۔ سعید غنی

فرقہ بندی اسلامی دنیا کے لئیے سب سے بڑا مسئلہ ہے اور شیعہ سنی فساد سے بہت بڑی تباہی ہوئی ہے۔ عارف علوی

جنرل ضیا۶ کے دور سے لوگوں کو ایک خاص سوچ کے تحت تیار کیا گیا۔ فیصل سبزواری

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: