RSS Feed

19 February, 2015 16:39

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

19-FEB-2015

قوم خود کش حملہ آور کے خلاف کاروائی کرنے پر تو متحد ہے لیکن جو سوچ اسے پیدا کرتی ہے پر تقسیم ہے۔ اسد عمر کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جن اداروں نے دہشت گردوں کے خلاف کاروائی کرنی ہے وہ سیاسی مداخلت کا شکار ہیں۔ اسد عمر

ہم جس مرض کا علاج کر رہے ہیں یہ اصل مرض نہیں ہے اصل مرض مزہبی جنونیت ہے۔ حیدر عباس رضوی

ہم ابھی تک مزہبی جنونیت کو ایک مسئلے کے طور پر ماننے کے لئیے تیار نہیں ہیں۔ حیدر عباس رضوی

مساجد کے سپیکر سے ایک دوسرے کو کافر کہا جاتا ہے اور ہم اس کا برا بھی نہیں مناتے۔حیدر عباس رضوی

سولہ دسمبر کے واقع کے بعد قوم اکٹھی ہوئی لیکن کچھ لوگوں نے بعد میں مزہبی اور سیاسی وجوہات کی وجہ سے اس میں منافرت پھیلانے کی کوشش کی۔ شیخ روحیل اصغر

اگر مدرسے سے مزہبی شدت پسندی کی سوچ پیدا ہو رہی ہے تو اسے روکنے میں کیا حرج ہے۔ شیخ روحیل اصغر

پاکستان میں آل سعود، بھارت اور اسرائیل دہشت گردوں کو پال رہے ہیں۔ آغا مرتضی پویا

افغانستان میں جہاد کے نام پر لوگوں کو لڑائی کے لئیے تیار کیا گیا اور انہیں روس کے خلاف لڑایا گیا۔ آغا مرتضی پویا

آل سعود، اسرائیل اور بھارت پاکستان کو کمزور کرنا چاہتے ہیں لیکن اللہ کے فضل سے وہ خود کمزور ہو چکے ہیں۔ آغا مرتضی پویا

مدرسوں کے علاوہ سکولوں سے بھی بچے انتہا پسندی کی سوچ لے کر پیدا ہو رہے ہیں۔ اسد عمر

ہمیں یہ دیکھنا ہے کہ مدارس میں کس قسم کا سلیبس پڑھایا جا رہا ہے۔ حیدر عباس رضوی

خطبہ جمعہ میں امام مسجد پاکستان کی خارجہ پالیسی سے لیکر امریکہ کے ساتھ تعلقات تک ہر موضوع پر بات کرتا ہے۔ حیدر عباس رضوی

پچھلے کچھ عرصے سے مدارس میں دینی کے ساتھ ساتھ دنیاوی تعلیم بھی دی جا رہی ہے۔ شیخ روحیل اصغر

جن لوگوں کی فتنہ پیدا کرنے والوں کے طور پر نشاندہی ہو چکی ہے ان کے خلاف کاروائی نہیں کی جا رہی۔ آغا مرتضی پویا

پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی باہر سے کروائی جا رہی ہے۔ آغا مرتضی پویا

دہشت گرد بنے نہیں بلکہ اسی کی دہائی میں ہم نے انہیں خود بنایا۔ اسد عمر

جب تک معاشرے میں سوشل جسٹس نہیں ہو گا سب کچھ ایسے ہی رہے گا۔ حیدر عباس رضوی

پشاور کے واقع کے بعد کچھ عرصہ خاموش رہنے کے بعد کچھ لوگوں نے دوبارہ سے تقسیم پیدا کرنی شروع کر دی ہے۔ شیخ روحیل اصغر

دھاندلی سے بر سر اقتدار آنے والوں کو ہر گز قبول نہ کریں ایسے لوگوں سے ہم کیا توقع رکھ سکتے ہیں۔ آغا مرتضی پویا۔

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: