RSS Feed

21 April, 2015 17:20

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

21-APRIL-2015

چین کے ساتھ معاہدے کے دور رس نتائج برآمد ہوں گے۔ شاہ محمود قریشی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

چین کے ساتھ معاہدہ آج نہیں طے ہوا اس پر مشرف دور پر بات ہو رہی تھی۔ شاہ محمود قریشی

دو ہزار آٹھ میں میں جب چین کے دورے پر گیا تو راہداری کے منصوبے پر بات ہوئی تھی۔شاہ محمود قریشی

چین نے اپنی پالیسی میں تبدیلی کی ہے اب وہ ایسٹ کی بجائے ویسٹ پر زیادہ توجہ دے رہا ہے۔ شاہ محمود قریشی

چین کو پاکستان کے زریعے سینٹرل ایشیا کی ریاستوں تک رسائی مل جائے گی جو لینڈ لاک ہیں۔ شاہ محمود قریشی

چین کی یورپ کو برآمدات میں بھی پاکستان کے راستے جانا انہیں بہت فائدے مند رہے گا۔ شاہ محمود قریشی

ہم چین کے ساتھ معاہدوں کو خوش آمدید کہتے ہیں لیکن ہمیں ان میں شفافیت چاہئیے۔ شاہ محمود قریشی

چین کے ساتھ چوالیس ارب کے منصوبے بنے ہیں بتایا جائے کہ پنجاب پر کتنا خرچ ہو گا اور دوسرے صوبوں پر کتنا ہو گا۔ شاہ محمود قریشی

چین کے ساتھ دوستی پر کسی کو اعتراض نہیں ہے اور ہماری تیسری نسل کی چین کے ساتھ دوستی چل رہی ہے۔ پرویز الہی

میں نے چین کے صدر کو کہا ہے کہ جو منصوبے انہوں نے پاکستان کے لئیے بنائے ہیں ان کی مانیٹرنگ بھی وہ خود ہی کریں۔ پرویز الہی

اگر چین کے بنائے گئے منصوبوں کا عام آدمی کو فائدہ نہ پہنچا تو پھر سارا کچھ خراب ہو جائے گا۔ پرویز الہی

ترکی کے صدر کا دورہ ہو یا چین کے میاں برادرز اس کو گھریلو اشو بنا لیتے ہیں وہاں تینوں صوبوں کے وزرا اعلی کو ہونا چاہئیے تھا۔ پرویز الہی

پاکستان کی چین کے ساتھ دیرینہ دوستی ہے چین کا جو بھی سربراہ پاکستان کا دورہ کرے اسے اچھی نظر سے دیکھا جاتا ہے۔فاروق ستار

پاکستان چین کاریڈور کا منصوبہ مشرف دور میں شروع ہوا اور اب اپنے منطقی انجام کو پہنچا ہے۔ فاروق ستار

دیکھنا یہ ہے کہ کیا ہمارا سسٹم اس قابل ہے جو انوسٹمنٹ چین کی طرف سے آ رہی ہے اس کو اچھی طرح سے سمبھال پائے۔ فارو ق ستار

چین کی بہت ساری سرمایہ کاری سافٹ لون ہے جو کسی نہ کسی صورت پاکستان کو واپس کرنا ہے۔ فاروق ستار

کوریڈور کے منصوبے کے علاوہ باقی سب چین اور پنجاب کے درمیان معاہدہ نظر آیا ہے۔ فاروق ستار

چین سے ملنے والا قرضہ پاکستان کے اٹھارہ کروڑ عوام نے اتارنا ہے تو کراچی کا سرکلر ریلوے کا منصوبہ بھی شامل کر لیا جاتا۔ فاروق ستار

چین کے سفارت خانے نے پاکستان کے تمام سیاست دانوں کو چینی صدر سے ملنے کی دعوت دی میں عمران خان کے ساتھ وہاں گیا۔ شاہ محمود قریشی

میرا سوال ہے کہ رات کو جب وزیراعظم کی طرف سے عشایہ دیا گیا تو وہاں تحریک انصاف کو کیوں مدعو نہیں کیا گیا۔شاہ محمود قریشی

جب چین کے ساتھ معاہدوں پر دستخط ہو رہے تھے تو چھوٹے صوبوں کے وزرا اعلی وہاں کیوں نہیں تھے۔ شاہ محمود قریشی

پرویز خٹک نے مجھے بتایا ہے کہ کے پی کے کی حکومت کو چین کے صدر کے دورے پر اعتماد میں نہیں لیا گیا اور نہ کوئی مشورہ کیا گیا۔ شاہ محمود قریشی

ہم چین کے ساتھ معاہدوں کو خوش آمدید کہتے ہیں لیکن انہیں مانیٹر کون کرے گا۔ شاہ محمود قریشی

قوم کو بتایا جائے کہ چین کے ساتھ پنتالیس ارب کے معاہدوں میں سے پنجاب پر کتنا خرچ ہو گا اور دوسرے صوبوں پر کتنا خرچ ہو گا۔ شاہ محمود قریشی

چین کے صدر کی آمد پر وہاں تین صوبوں کے وزرا اعلی کیوں نہیں تھے۔ فاروق ستار

رابطے کی سڑک کا روٹ کون سا ہو گا یہ بات واضع نہیں ہے۔ فاروق ستار

چین کے ساتھ ہونے والے معاہدوں پر سب کو اعتماد میں لیا جائے تا کہ کوئی غلط فہمی پیدا نہ ہو۔ شاہ محمود قریشی

میں اس بات کی حمایت کرتا ہوں کہ سینئیر پارلیمنٹیرینز پر مشتمل ایک مانیٹرنگ گروپ ہونا چاہئیے جو چین سے ہونے والے معاہدوں پر عملدرآمد کی نگرانی کرے۔ فاروق ستار

این اے دو سو چھیالیس میں مقابلہ جماعت اسلامی اور پی ٹی آئی کے درمیان ہے کہ وہاں دوسری پوزیشن پر کون آئے گا۔ فاروق ستار

این اے دو چھیالیس میں ووٹنگ کی رفتار سست نہیں ہونی چاہئیے ورنہ ایم کیو ایم کو کم ووٹ پڑ سکتے ہیں۔فاروق ستار

عالمی مبصرین کے علاوہ فافن کو این اے دو سو چھیالیس میں انتخابات کو مانیٹر کرنا چاہئیے۔ فاروق ستار

پی ٹی آئی چاہتی ہے کہ الیکشن شفاف ہوں اسی میں سب کا فائدہ ہے۔ شاہ محمود قریشی

کسی کی جرات نہیں تھی کہ این اے دو سو چھیالیس میں داخل ہو سکے آج وہاں پی ٹی آئی کے جھنڈے لہرا رہے ہیں۔ شاہ محمود قریشی

جماعت اسلامی نے ہمارے لئیے گنجائش نیں نکالی لیکن دوسری جماعتوں نے ہماری حمایت کی ہے۔ شاہ محمود قریشی

این اے دو سو چھیالیس ایم کیو ایم کا مظبوط گڑھ ہے پی ٹی آئی وہاں پیغام لے کر گئی ہے کہ متبادل قیادت موجود ہے۔ شاہ محمود قریشی

جماعت اسلامی کا مسلم لیگ ن سے حمایت مانگنا سمجھ میں نہیں آیا کاش انہوں نے ایسا نہ کیاہوتا۔ شاہ محمود قریشی

قائد اعظم کا نظریہ پاکستان سیکیولر اور پروگریسو تھا۔ فاروق ستار

قائد اعظم کا نظریہ پاکستان پرگریسو ضرور تھا لیکن سیکیولر نہیں تھا۔ شاہ محمود قریشی

لوگوں کو لائن میں لگ کر بغیر کسی دباؤ کے اپنا ووٹ کا حق استعمال کرنے کا موقع ملنا چاہئیے۔ شاہ محمود قریشی

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: