RSS Feed

3 February, 2016 07:04

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

02-FEBURARY-2016

پی آئی اے کے ملازمین اپنا احتجاج کر رہے تھے ان پر گولی چلانا جمہوری طرز عمل نہیں ہو سکتا۔ علی رضا زیدی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ڈکٹیٹرشپ میں لوگوں کی آواز دبانے کے لئیے جس طرح طاقت استعمال ہوتی تھی اس جیسا کام ہو ہے۔علی رضا زیدی

پی آئی اے کے لوگوں کو پرائیویٹائزیشن کی خاطر مار دیا ہے حکومت جھوٹ بولتی رہی کہ وہ پرائیویٹ نہیں کرے گی۔ عارف علوی

حکومت آئی ایم ایف سے بھیک مانگ رہی ہے اس کے کہنے پر پی آئی اے کو پرائیویٹ کرنا چاہتی ہے۔عارف علوی

پچھلے دو تین دنوں سے حکومت کے وزیروں کا جو غرور اور تکبر تھا اس سے یہ واضع تھا کہ انہیں پی آئی اے کے ملازمین کا کوئی احساس نہیں ہے۔ سعید غنی

وزیراعظم نے اس واقع کے بعد میڈیا سے بات کی تو ان کا رویہ بھی ویسا ہی تھا انہوں نے مرنے والوں پر افسوس نہیں کیا۔ سعید غنی

حکومت کہتی ہے کہ پی آئی اے میں بہت زیادہ ملازمین ہیں تو پھر پچھلے دو تین سال میں دو ہزار سے زیادہ لوگوں کو کیوں بھرتی کیا ہے۔ علی رضا زیدی

پی آئی اے کا خسارہ ملازمین کہ وجہ سے نہیں ہے بلکہ اپنے دوستوں کو لگانے کی وجہ سے ہے ۔ عارف علوی

میں یقین دلاتا ہوں کہ حکومت کے کسی عہدیدار نے کسی ایجئنسی کو گولی چلانے کا حکم نہیں دیا۔ طارق فضل چوہدری

تحقیقات ہو رہی ہیں بہت جلد حقائق سب کے سامنے لایں گے کہ پی آئی اے کے ملازمیں پر گولی کس نے چلائی۔ طارق فضل چوہدری

پہلے گولیوں سے مارتے ہیں پھر بےحسی کا مظاہرہ کرتے ہیں مسلم لیگ ن کے کچھ لوگوں نے کہا ہے کہ گولی خود پی آئی اے کے ملازم نے چلائی ہے۔ عارف علوی

ہم نے طے کیا ہے کہ ہم مر جایں گے لیکن پی آئی اے کی پرائیویٹائزیشن نہیں ہونے دیں گے۔ عارف علوی

پی آئی اے کی پرائیویٹائزیشن کے خلاف ہمارے علاوہ ساری اپوزیشن جماعتیں بھی شامل ہیں۔عارف علوی

اگر سی سی ٹی وی فوٹیج ضائع کروا دی گئی تو پھر سب کو پتہ ہے کہ یہ کون کروائے گا۔ سعید غنی

مسلم لیگ ن کی حکومت جتنا مرضی زور لگا لے ہم پی آئی اے کی پرائیویٹائزیشن نہیں ہونے دیں گے۔ سعید غنی

پی آئی اے کے ملازمین کو مارنے میں کون ملوث ہے اس کی فوری انکوائری ہونی چاہئیے۔ علی رضا زیدی

پی آئی اے کے ملازمین کو مارنے کے واقع کی جیوڈیشل انکوائری ہونی چاہئیے یہ انکوائری پولیس سے نہیں کروانی چاہئیے۔ عارف علوی

اپوزیشن زمہ داری کا مظاہرہ کرے دیکھے کہ پی آئی اے کی نجکاری ملکی مفاد میں ہے یا نہیں ہے۔ طارق فضل چوہدری

ایک ہفتے کے اندر پی آئی اے کے ملازمین کو مارنے کے واقع کی انکوائری رپورٹ لوگوں کے سامنے لے کر آیں گے۔ طارق فضل چوہدری

اگر حکومت سنجیدہ ہے تو پی آئی اے کو لازمی سروس ایکٹ میں سے باہر نکالے۔ علی رضا زیدی

مسلم لیگ ن کی حکومت رعونت اور تکبر سے باہر آئے اور اس ملک کے لوگوں کو انسان سمجھے کیڑے مکوڑے نہ سمجھے۔ سعید غنی

پی آئی اے کے بہت سے ملازمین جو کہ مظاہرے کی جگہ پر موجود تھے ندیم ملک کے ساتھ اپنے اپنے خیالات کا اظہار کیا ان کے خیالات نیچے بیان کئیے جا رہے ہیں کسی ملازم کا نام نہیں لکھا جائے گا۔

وزیر اعظم نے ہمیں یقن دلایا تھا کہ وہ پی آئی اے کو رائیویٹ نہیں کرنے دیں گے۔

شجاعت عظیم اور چوہدری منیر رائیل ائیرپورٹ سروسز کمپنی کے پارٹنرز ہیں اور حکومت پی آئی اے کو انہیں بیچنا چاہتی ہے۔

پی آئی اے کے ملازمین کی ہلاکت کی ایف آئی آر پرویز رشید، وزیرداخلہ اور وزیراعلی کے خلاف کٹنی چاہئیے۔

جن لوگوں نے گولی چلائی ہم نے انہیں خود دیکھا ہے دو لوگ تھے اور ان کی چھوٹی چھوٹی داڑھی تھی۔

گولی مارنے والے دونوں لوگوں نے رینجرز کی یونیفارم پہنی ہوئی تھی۔

جب رینجرز والے آئے تو ہم نے ان کا تالیاں بجا کر استقبال کیا ہم حیران تھے کہ انہوں نے گولی کیوں چلائی۔

ہم سب لوگوں نے گولی چلانے والوں کو اپنی آنکھوں سے دیکھا ہے اور ہم گواہی دیں گے۔

ڈان نیوز کے کیمرہ مین نے گولی مارنے والوں کی وڈیو بنائی ہم نے خود دیکھا ہے۔

رینجرز نے ڈان نیوز کے کیمرہ مین کو پکڑنے کی کوشش کی تو اس کا بازو اور کیمرہ ٹوٹ گئے۔

پی آئی اے کے ملازمین کو مارنے کی ایف آئی آر پرویز رشید اور شجاعت عظیم کے خلاف کٹوا دی گئی ہے۔

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: