RSS Feed

4 May, 2016 04:13

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

02-MAY-2016

اپوزیشن جماعتوں نے یہ نہیں کہا کہ وزیراعظم سے استعفی نہ مانگا جائے بلکہ کہا ہے کہ پہلے تحقیقات ہوں بعد میں مانگا جائے۔ سعید غنی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

شیر پاؤ اور اے این پی کے علاوہ باقی تمام اپوزیشن جماعتوں کا مطالبہ تھا کہ استعفی پہلے ہونا چاہئیےتحقیقات بعد میں ہوں۔ سعید غنی

طلال چوہدری نے ایک ٹی وی انٹرویو میں کہا ہے کہ کہ ٹی او آر حکومت کے ہی رہیں گے اپوزیشن کی کوئی اچھی تجویز ہوئی تو غور کریں گے۔ سعید غنی

لگتا یہ ہے کہ یا تو حکومت کے ٹی او آر ہوں گے یا پھر اپوزیشن کے ہوں گے۔ سعید غنی

اپویشن بھی اپنے ٹی او آر سے پیچھے نہیں ہٹے گی کیونکہ انیس سو چھپن کے قانون کے تحت کسی بھی انکوائری کمشن کی آج تک رپورٹ سامنے نہیں آئی۔ سعید غنی

انیس سو چھپن کے آئین کے تحت بننے والے تحقیقاتی کمشن کو کسی کو سزا دینے کا اختیار نہیں ہو گا۔ سعید غنی

وزیراعظم کو پہلے دن کہہ دینا چاہئیے تھا کہ اگر کوئی غلطی ہوئی ہے تو وہ معافی مانگتے ہیں اور وہ معاملے کی شفاف انکوائری کروایں گے۔ مشرف زیدی

پاناما پیپرز کی انکوائری میں ہونا یہ ہے کہ کچھ نہیں ہونا۔ مشرف زیدی

نو مئی کو پاناما پیپرز کچھ اور انکشافات کرنے جا رہا ہے اس میں اپوزیشن جماعتوں کے لوگوں کے بھی نام ہو سکتے ہیں۔ مشرف زیدی

اپوزیشن حکومت پر تنقید ضرور کرے لیکن ایکی تعمیری طریقے سے آگے بھی بڑھے۔ مشرف زیدی

پاناما پیپرز میں دنیا کے کئی ممالک کا نام آیا ہے لیکن پاکستان واحد ملک ہے جس نے اتنا بڑا تحقیقاتی کمشن بنایا ہے۔طارق فضل چوہدری

پاکستان تحریک انصاف پیالی میں طوفان لانے کی کوشش کر رہی ہے۔ طارق فضل چوہدری

کیپٹن صفدر نے الیکشن کمشن کو اپنے اثاثوں کی تفصیل میں مریم نواز کی آف شور کمپنیوں کا زکر نہیں کیا ۔سعید غنی

حسین، حسن، مریم، کلثوم نواز اور مسلم لیگ ن کے دیگر لیڈروں کے آف شور کمپنیوں پر بیانات میں بہت زیادہ تضاد ہے۔ سعید غنی

آئس لینڈ کے وزیراعظم نے پاناما پیپرز کی وجہ سے استعفی دیا اور ڈیوڈ کیمرون نے اپنے والد سے ادھار لئیے گئے بیس ہزار ڈالر کی تفصیلات بتائیں۔ مشرف زیدی

اپوزیشن نے ٹی او آر بنائے ہیں کہ پاناما پیپرز کے الزامات پروزیراعظم کے خلاف تین ماہ جبکہ باقی لوگوں کے خلاف ایک سال میں تحقیقات مکمل کی جایں۔حامد خان

پاناما پیپرز میں جن جن لوگوں کے نام ہیں سب کے خلاف تحقیقات ہونی چاہئییں لیکن آغاز وزیراعظم سے ہونا چاہئیے۔ حامد خان

وزیراعظم نے آج بھی کہا ہے کہ ان کے خلاف ایک پیسے کی بھی کرپشن ثابت ہو جائے تو وہ زمہ دار ہوں گے۔ طارق فضل چوہدری

اخلاقی طور پر وزیراعظم پاناما پیپرز کے الزامات کی موجودگی میں دنیا کا سامنا نہیں کر سکیں گے۔ سعید غنی

حکومت کے دروازے بات چیت کے لئیے کھلے ہیں وہ اپوزیشن سے بات چیت کے لئیے تیار ہے۔ طارق فضل چوہدری

پاکستان میں صرف غریب کو ہی سزا ملتی ہےکبھی کسی امیر آدمی کو سزا نہیں ہوئی۔ مشرف زیدی

حکومت اپوزیشن کی زبان پر تو اعتراض کر رہی ہے لیکن وزیراعلی اور انفرمیشن منسٹر سمیت مسلم لیگ ن والے بہت غلط زبان کا استعمال کر رہے ہیں۔ سعید غنی

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: