RSS Feed

19 July, 2016 17:55

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

19-JULY-2016

انیس قائمخوانی روپوش نہیں تھے وہ اپنی ضمانت کی توسیع کے لئیے گئے لیکن جج صاحب نے انہیں گرفتارکرنے کا فیصلہ کیا۔ رضا ہارون کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

آگے کیا کیا جائے پاک سر زمین پارٹی کا وکیل اس پر غور کرے گا۔ رضا ہارون

میں پہلے دن سے سمجھتا ہوں کہ انیس قائمخوانی بیقصور ہیں اور اسی لئیے عدالت میں پیش ہوئے کیونکہ وہ بیقصور ہیں۔ رضا ہارون

وسیم اختر اور رؤف صدیقی کو ایسے الزام میں پکڑا گیا ہے کہ جس کا کوئی ثبوت بھی نہیں ہے کہ انہوں نے کسی دعہشت گرد کا علاج کروایا یا نہیں۔ آصف حسنین

ابھی عدالت کے سامنے کسی قسم کی کوئی تفصیلات نہیں ہیں پھر بھی گرفتاری کا حکم دیا گیا ہے۔ آصف حسنین

ایم کیوا یم کے لوگوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے انہیں نوے نوے دنوں کے لئیے بند کیا جا رہا ہے۔ آصف حسنین

پوپا کے بہت اچھے فوائد حاصل ہوئے اس قانون کو خاص حالات کے لئیے بنایا گیا تھا۔ ڈاکٹر مصدق ملک

سندھ کے وزیراعلی رینجرز کو ا ن کی مدت میں توسیع پر بات کرنے کے لئیے دعوت دیں گے۔ ڈاکٹر مصدق ملک

ایم کیو ایم اور پاک سر زمین پارٹی کے رہنماؤں کی گرفتاری کا فیصلہ عدالت نے کیا ہے میں کچھ نہیں کہہ سکتا۔ مولا بخش چانڈیو

ڈاکٹر عاصم خود کہہ چکے ہیں کہ ان سے زبردستی بیان لیا گیا۔آصف حسنین

الزام یہ ہے کہ دہشت گردوں کا علاج کیا گیا تو ڈاکٹر نے حلف اٹھایا ہوتا ہے کہ وہ ہر کسی کا علاج کرے گا چاہے وہ کوئی بھی ہو۔جسٹس شائق عثمانی

اگر دہشت گردوں کا علاج ہوا تھا تو اس کو رپورٹ کیوں نہیں کیا گیا۔ شائق عثمانی

الزام ایسا نہیں تھا کہ ضمانت ہی منسوخ کر دی جاتی کیس چلا تو یہ لوگ رہا ہو جایں گے۔شائق عثمانی

رینجرز نے بہت اچھا کام کیا ہے لیکن سندھ پولیس کو بھی کریڈٹ دیں انہوں نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔ مولا بخش چانڈیو

حکومتی فیصلوں میں اونچ نیچ ہوتی رہتی ہے لیکن یہ طے ہے کہ رنجرز سندھ پولیس کی مد کرتی رہے گی۔ مولا بخش چانڈیو

رینجرز کے مسئلے پر سیاسی قیادت سوچ سمجھ کر فیصلے نہیں کرے گی تو معاملات ٹھیک نہیں ہوں گے۔ جنرل غلام مصطفی

ہمیں پتہ ہے کہ کراچی اور پنجاب کے مسائل کتنے بڑے ہیں اس کے مطابق رینجرز کو ایک یا دو سال دئیے جانے چاہئییں۔ جنرل غلام مصطفی

اگر ہم فیصلہ کر لیں کہ رینجرز کو ہم نے ایک سال بعد واپس کر دینا ہے تو اس دوران پولیس کو اس طرح استوار کریں کہ وہ زمہ داری سمبھال سکے۔ جنرل غلام مصطفی

ملک کے اندر دہشت گردوں کو ختم کرنے کے لئیے ہمیں رینجرز کا استعمال کرنا پڑے گا۔ ڈاکٹر مصدق ملک

کراچی میں سیاسی پارٹیوں نے جو مافیا بنایا ہوا تھا اور کوئی ان کو ہاتھ نہیں ڈالتا تھا رینجرز نے ان کے خلاف بہت اچھا کام کیا ہے۔ شائق عثمانی

کراچی کا اصل مسئلہ سٹریٹ کرائم ہے جسے صرف پولیس کنٹرول کر سکتی ہے یہ رینجرز کے بس کا کام نہیں ہے۔ شائق عثمانی

کراچی پولیس کو سندھ حکومت بہت مس یوز کرتی ہے۔ شائق عثمانی

سندھ پولیس اب پرانے زمانے والی نہیں ہے اس میں بہت سے پڑھے لکھے اور ایماندار نوجوان آ چکے ہیں۔ شائق عثمانی

کراچی میں کچھ مارشل لا ٹائپ لانا پڑے گا۔ شائق عثمانی

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: