RSS Feed

11 October, 2016 16:36

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

11-OCTOBER-2016

کراچی کے وٹرز اور عوام ایم کیو ایم کے ساتھ کئی دہائیوں سے جڑے ہوئے ہیں۔ آج کے واحد مہمان ڈاکٹر فاروق ستار کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

بائیس اگست کو پاکستان کے خلاف نعرہ لگا تو ایم کیو ایم کے لوگوں نے خود الطاف حسین کے ساتھ ایک لائن کھینچ لی۔

تئیس اگست سے ہم اپنے فیصلے خود کر رہے ہیں اور لندن سے بھی اس کی توثیق آ گئی۔

الطاف حسین نے ایم کیو ایم بنائی تھی لیکن اب وہ اس کے قائد ہیں اور نہ وہ پارٹی چلا رہے ہیں۔

ایم کیو ایم لندن نے میری بنیادی رکنیت تک منسوخ کر دی ہے۔

بائیس اگست کو الطاف حسین نے اپنے پاؤں پر کلہاڑی نہیں ماری بلکہ کلہاڑی پر اپنا پاؤں مارا۔

بائیس اگست کو الطاف حسین نے اپنے پاؤں پر کلہاڑی نہیں ماری بلکہ کلہاڑی پر اپنا پاؤں مارا۔

اگر اسٹیبلشمنٹ دوبارہ الطاف حسین کے ساتھ مل جاتی ہے تو میں عوام کے ساتھ کھڑا ہوں گا۔

بلاول بھٹو ابھی ستائیس اٹھائیس سال کے ہیں ابھی سے اپنی کریڈیبیلٹی داؤ پر لگا لیں گے تو آگے جا کر کیا کریں گے۔

پہلے رحمان ملک پیپلز پارٹی کو چلاتے تھے اب بلاول چلا رہے ہیں۔

پیپلز پارٹی کے لئیے بھی مائنس ون فارمولا آیا تھا جس سے بچنے کے لئیے بلاول پی ٹی آئی کی طرف مائل ہوئے بات نہیں بنی تو ایم کیو ایم کی طرف آ گئے۔

مسظفی کمال اور انیس قائم خانی مایوس ہو کر علحیدہ ہو گئے ہم نے پارٹی کو نہیں چھوڑا اور بہت سی بہتری لے کر آئے۔

مصفی کمال ایم کیو ایم میں اچھے نمبر دو تھے لیکن ان کے پاس کوئی وژن نہیں تھا۔

مشرف دور سے پہلے ایم کیو ایم کے کچھ لوگ بھارت چلے گئے تھے انہوں نے وہاں ٹریننگ بھی لی تھی۔

ہم نے ایم کیو ایم کے بھارت چلے جانے والے کارکنوں کو جماعت سے نکال دیا تھا۔

کراچی میں را ملوث نہ ہو یہ ہو نہیں سکتا اس میں ایم کیو ایم کے کچھ لوگ بھی استعمال ہوئے ہوں گے۔

اب ہم ایم کیو ایم میں لوگوں کو چھان پھٹک کر لے رہے ہیں۔

مسلم لیگ ن میں بھی مائنس ون ہو گا کیونکہ پاناما لیکس کا کیس جلد یا بدیر ضرور چلے گا۔

عمران خان نے پچھلے دو سالوں میں بہت سی سیاسی غلطیاں کی ہیں۔

عمران خان کو میڈیا کے زریعے کرپشن کے خلاف اپنی مہم کو آگے بڑھانا چاہئیے تھا۔

پی ٹی آئی کو پاناما لیکس پر ہمارے ساتھ بہت پہلے رابطہ کر لینا چاہئیے تھا۔

میں نے کہا تھا کہ ایم کیو ایم کے دفاتر کو توڑیں نہیں بلکہ فلاحی اداروں کو دے دیں۔

ہم مان لیتے ہیں کہ کراچی سے اسلحہ پکڑا گیا ہے لیکن پھر اس کیس کو اس کے منطقی انجام تک ضرور پہنچایں۔

ہو سکتا ہے کہ ایم کیو ایم کے کسیبندے نے اسلحے کی اطلاع کی ہو اور اسلحے کورکھا بھی ہو تو پھر ان کو پکڑیں۔

کورنگی ملیر اور لانڈھی سے ایم کیو ایم کے پچاس فیصد کارکن پی ایس پی اور ایم کیو ایم حقیقی میں جا چکے ہیں۔

ڈاکٹر عمران فاروق، عظیم طارق، لیاقر علی خان، جنرل ضیاالحق اور بینظیر کے قتل کی مکمل تحقیقات ہونی چاہئییں۔

میں نے اپنی سکیورٹی کے لئیے کور کمانڈر کراچی، جنرل راحیل اور وزیراعظم کو خط لکھا ہے لیکن کسی نے کوئی جواب نہیں دیا۔

چوہدری نثار کو میں نے زاتی طور پر خط دیا ہے۔

مجھ پر مزہبی تنظیموں کی طرف سے حملہ ہو سکتا ہے۔

مراد علی شاہ نے اپنی خواہش کا اظہار کیا ہے کہ کراچی کا مئیر سلاخوں سے باہر اچھا لگتا ہے۔

ہم سے گارنٹی لے لیں کہ وسیم اختر ملک سے باہر یا کہیں بھی نہیں جایں گے۔

میری خواہش ہے کہ بارہ مئی کے واقعے کی تحقیات ہوں لیکن اس کے علاوہ علی گڑھ کالونی، پکا قلعہ کے واقعات کی بھی تحقیقات ہونی چاہئییں۔

اگر ہمیں کام کرنے کا موقع نہیں دیا گیا تو ہم قومی صوبائی اسمبلیوں اور بلدیاتی اداروں سے بھی استعفے دے دیں گے۔

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: