RSS Feed

6 April, 2017 16:06

Posted on

NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

06-APRIL-2017

سندھ میں پینے کا پانی نہیں سڑکیں نہیں سب کچھ صرف اشتہاروں میں ہے۔ لیاقت جتوئی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ہمارا اور عمران خان کا ایک ہی منشور ہے ہم تبدیلی چاہتے ہیں۔ لیاقت جتوئی

پاکستان میں موراثی سیاست ہے ہمیں امید ہے کہ ہم عمران خان کے ساتھ مل کر اس میں تبدیلی لایں گے۔ لیاقت جتوئی

ہم سندھ کے کونے کونے میں جایں گے ہمیں امید ہے کہ پی ٹی آئی سندھ سے ضرور جیتے گی۔۔ لیاقت جتوئی

جس دن بھٹو اور بینظیر وفات پا گئے اس دن پیپلز پارٹی ختم ہو گئی تھی اگلا الیکشن غریب اور بڑے لوگوں کے درمیان ہو گا۔ لیاقت جتوئی

سیاسی نعرے لگتے رہتے ہیں راحیل منیر یا کوئی بھی ہو اس کو عوام ووٹ دیں گے تو وہ آئے گا۔ رانا ثنا اللہ

سیاست میں آنے کا ہر کسی کو حق ہے لیکن منتخب عوام کریں گے۔ رانا ثنا اللہ

مسلم لیگ ن کا لیڈر صرف نواز شریف ہے وہ جو بھی فیصلہ کرے گا اس کو سب قبول کریں گے۔رانا ثنا اللہ

کسی سیاسی جماعت کی سب سے بڑی بات اس کی آئیڈیالوجی ہوتی ہے جس کو وہ آگے لے کر چلتی ہے۔ شہلا رضا

پیپلز پارٹی کے بلاول بھٹو نے سب سے پہلے دہشت گردی کے خلاف آواز بلند کی۔ شہلا رضا

برصغیر میں خاندانی سیاست کی ایک روایت ہے مجھ میں وہ کرزما نہیں ہے جو بلاول بھٹو میں ہے۔ شہلا رضا

مجھے شہلا رضا کی باتیں سن کر افسوس ہوا اگر یہ بات درست ہے تو پھر مجھ جیسے مڈل کلاس کے بندے کو سیاست میں نہیں ہونا چاہئیے۔ علی محمد خان

اگر مریم نواز کے بعد اس کے بیٹے اور پھر اس کے بیٹے نے وزیراعظم بننا ہے تو پھر عام آدمی کیا سوچے گا۔ علی محمد خان

اگر ایک پاکستانی ناسا میں اور برطانیہ کے ہیلتھ پروگرام این ایچ ایس میں کام کر سکتا ہے تو پھر وہ پاکستان کی سیاسی میں کیوں نہیں کام کر سکتا۔ علی محمد خان

قائد اعظم نے پاکستان اس لئیے نہیں بنایا تھا کہ عام آدمی صرف اس لئیے الیکشن نہ لڑ سکے کیونکہ اس کے پاس دس کروڑ روپیہ نہیں ہے۔ علی محمد خان

بینظیر بھٹو سب سے پہلے بڑی لیڈر اس لئیے تھیں کیونکہ وہ زوالفقارعلی بھٹو کی بیٹی تھیں۔رانا ثنا اللہ

بینطیر بھٹو اس لئیے بھی بڑی لیڈر تھیں کیونکہ ان کی جماعت صرف ان پر متفق تھی۔ رانا ثنا اللہ

بینظیر بھٹو اس لئیے سیاست میں آئی تھیں کیونکہ بھٹو کی پھانسی کے بعد سارے انکل بھاگ چکے تھے۔ شہلا رضا

کچھ لوگوں کو سیاست تحفے میں ملی ہے وہ ڈکٹیٹر کے پولنگ ایجنٹ بنے ہوئے تھے۔ شہلا رضا

اگر ایک ڈاکٹر کا بیٹا ڈاکٹر یا وکیل کا بیٹا وکیل بننا چاہتا ہے تو اس میں کیا برائی ہے۔ شہلا رضا

جنرل باجوہ یا راحیل کا بیٹا کور کمانڈر کانفرنس کو صرف بیٹا ہونے کی وجہ سے ہیڈ نہیں کر سکتا کیو اس کو پراسس میں سے گزرنا ہو گا۔ علی محمد خان

راہول گاندھی ایک لیڈرکا بیٹا ہونے کے باوجود آگے نہیں آ سکا کیونکہ اس نے ڈلیور نہیں کیا اور ایک چائے والے کا بیٹا وزیراعظم بن گیا۔ رانا ثنا اللہ

قائد اعظم ایک عام آدمی تھے انہوں نے محنت کی اور پاکستان بنا کر دیا۔ علی محمد خان

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements

About NadeemMalikLive

NADEEM MALIK LIVE IS A FLAGSHIP CURRENT AFFAIRS PROGRAMME OF SAMAA.TV

Comments are closed.

%d bloggers like this: